سی پیک اور طلبہ اور طالبات

تحریر:
وقتِ اشاعت:

سی پیک کی افادیت سے انکار نہیں کیا جا سکتا، لیکن جس طرح سے اس کے بارے میں پاکستان میں مبالغہ آرائی کی جا رہی ہے وہ ہوائی قلعے تعمیر کرنے کے مترادف ہے۔


اے سندھ اماں تو کہاں ہے؟؟؟

تحریر:
وقتِ اشاعت:

اگر ایک اجرک اور ایک ٹوپی کے پیسے ایک غریب کو دے دیئے جائے تو اس غریب کے سات سے دس دن تک گزازہ ہو جائے گا وہ اپنے بچوں کے ساتھ دس دن تک دو وقت کی روٹی کھائیں گے!!!


ہوشیار باش

تحریر:
وقتِ اشاعت:

بے شک عقل والوں کیلئے نشانیاں ہیں مگر تم نہیں سمجھو گے


کوئٹہ دہشت گردی ایک اور سانحہ

تحریر:
وقتِ اشاعت:

ہماری دہشت گردی کے خاتمے کی خلاف حکمت عملی اور ہمارے بیانات میں شفافیت ہونی چاہیے تاکہ ہم آئندہ ہونے والے واقعات کی روک تھام کر سکیں۔


خدا حشر میں ہو مددگار میرا

تحریر:
وقتِ اشاعت:

یہ جان کر بہت افسوس ہوا کہ منگل کے دن قومی اسمبلی میں بلوچستان سے آئے ایک رکن قومی اسمبلی نے ایسی تقریر جھاڑدی جو اس ملک میں امن وامان کو یقینی بنانے والے اداروں کی حوصلہ شکنی کا باعث ہوسکتی ہے


مائنس ون کے شاخانے

تحریر:
وقتِ اشاعت:

بھٹو کی بیٹی کو اقتدار تو ملا لیکن انہیں ’’قابو‘‘ میں رکھنے کے لئے پنجاب میں سرپرستی کی گئی نواز شریف کی


میں سمجھانا نہیں چاہتا

وقتِ اشاعت:

بلوچ اس لیئے پاکستان کے ساتھ نہیں رہنا چاہتا کیونکہ تاریخ کے کسی بھی دور سے اور کسی بھی بیرونی قوم سے کئی گنا زیادہ بلوچ آپ کے ہاتھوں قتل ہوئے ہیں